77

نیازی حکومت کے خلاف مارچ کریں گے تو سب ہمارے ساتھ ہوں گے، آصف زرداری

نواب شاہ: پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف زرداری نے کہا کہ نیازی حکومت کے خلاف مارچ کریں گے تو فضل الرحمن، اسفند یار ولی، بلوچستان کے بلوچ، کے پی کے سے کچھ افراد اور فاٹا کے اراکین اسمبلی ہمارے ساتھ ہوں گے۔ زرداری ہاؤس نواب شاہ میں اراکین اسمبلی، پارٹی عہدے داروں اور کارکنوں کے اعزاز میں دیئے گئے عشائیہ سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت ایک سازش کے ذریعے مجھے عوام سے دور کرنا چاہتی ہے لیکن میں خوف زدہ ہونے والا نہیں ہوں، ماضی میں بھی مجھے اور بی بی شہید کو جھوٹے الزامات میں جیل میں رکھا گیا۔ شریک چیئرمین پیپلز پارٹی نے کہا کہ میں مقدمات سے نہیں ڈرتا میرے خلاف سب مقدمات جھوٹے اور بے بنیاد ہیں، مجھے معلوم ہے کہ میرے مقدمات میں ججز پر دباؤ میں ہیں لیکن میں جھوٹے مقدمات سے قانونی طور پر بری ہو جاؤں گا کارکن پریشان نہ ہوں ان کا مقابلہ میں خود کروں گا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کا مقصد 18 ویں ترمیم کو ختم کرنا ہے لیکن یہ ترمیم 8 ماہ کے بحث و مباحثہ کے بعد منظور کی گئی، ہم 18 ویں ترمیم کو کسی صورت ختم نہیں ہونے دیں گے۔ آصف زرداری نے کہا کہ حکومت کرنا عمران کے بس کی بات نہیں ہے، عمران صرف چندہ لینا جانتا ہے حکومت کرنا نہیں جانتا، اس حکومت میں ڈالر 155 روپے کی سطح پر پہنچا جس کی وجہ سے ملکی قرضوں میں 55 فیصد اضافہ ہوا۔ آصف زرداری نے کہا کہ نیازی حکومت کے خلاف جب ہم مارچ شروع کریں گے تو سب ہمارے ساتھ ہوں گے، اس وقت بھی مولانا فضل الرحمن، اسفند یار ولی، بلوچستان کے بلوچ، کے پی کے سے کچھ افراد اور فاٹا کے اراکین اسمبلی میرے ساتھ ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں