55

فالج کے حملے نے اس شخص کو 50 گھنٹے تک کرسی پر منجمد کردیا!

بیجنگ: چین میں ایک انٹرنیٹ کیفے میں کمپیوٹر استعمال کرنے والے شخص فالج کے حملے کا شکار ہو کر بغیر ہلے جلے مسلسل 50 گھنٹے تک کرسی پر بیٹھا رہا۔ بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق، 42 سالہ شین ژین کو فالج کے دورے کے سبب اسپتال لایا گیا۔ فالج کے باعث مریض کا جسم مکمل طور پر مفلوج ہوگیا تھا اور صرف دل کی دھڑکن جاری تھیں۔ مریض کو اسپتال لانے والوں نے بتایا کہ یہ شخص ایک انٹرنیٹ کیفے میں مسلسل 50 گھنٹے کرسی پر بیٹھا رہا اور اس دوران ایک بار بھی وہ کسی کام کےلیے نہیں اُٹھا جس پر عملے نے شک کی بنیاد پر دیکھا تو وہ بے سدھ تھا۔ ڈاکٹروں نے بتایا کہ مریض کے دماغ کے اہم حصوں میں خون کی کلاٹنگ ہے جس کی وجہ سے اس کا جسم کام نہیں کررہا ہے۔ تاہم اس بات کا تعین نہیں کیا جا سکا کہ مذکورہ شخص انٹرنیٹ کیفے میں داخل ہونے کے کتنی دیر بعد فالج کا شکار ہوا تاہم پولیس کو فراہم کی گئی سی سی ٹی وی فوٹیج سے پتا چلتا ہے کہ وہ کرسی پر بیٹھنے کے بعد سے اگلے 50 گھنٹے تک کرسی نہیں اُٹھا یہاں تک کہ عملہ متوجہ ہوا اور اسے اسپتال منتقل کیا گیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں