92

ایران کے سپریم لیڈر علی خامنہ ای کی ذاتی دولت 200 ارب ڈالر ہے

بغداد : امریکہ کی جانب سے دعویٰ کیا گیا ہے کہ ایران کے سپریم لیڈر علی خامنہ ای کی ذاتی دولت 200 ارب ڈالر ہے۔عراقی دارالحکومت بغداد میں قائم امریکی سفارتخانے کی جانب سے ایک بیان کے ذریعے علی خامنہ ای کی دولت کے حوالے سے ناقابل یقین دعویٰ کیا گیا ہے۔ سفارتخانے نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ ایرانی حکومت کے تمام حصوں میں کرپشن پوری طرح سرایت کرچکی ہے جو اوپر سے شروع ہوتی ہے۔بیان میں کہا گیا ہے کہ ایک طرف تو ملاﺅں کی 40 سالہ حکومت میں عوام بھوک سے مر رہے ہیں لیکن دوسری طرف ایران کے موجودہ سپریم لیڈر کے اثاثوں کی مالیت 200ارب ڈالر کے قریب ہے ۔خیال رہے کہ ایران میں 1979 میں انقلاب آیا تھا جس کے بعد سے ایران پر مذہبی طبقے کی حکومت ہے جن سے امریکہ نالاں ہے، کچھ روز پہلے امریکہ کی جانب سے ایران کی فوج کی ذیلی شاخ پاسداران انقلاب کو دہشتگرد قرار دیا گیا تھا جس کے جواب میں ایران نے امریکہ کی تمام مسلح افواج کو دہشتگرد قرار دے دیا۔ امریکہ کی جانب سے ایران کو معاشی پابندیوں کا بھی سامنا ہے، چند روز قبل امریکہ نے پابندیوں میں مزید سختی کی اور ایران سے تیل کی خریداری سے استثنیٰ ختم کردیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں