45

یونس کے بعد مصباح الحق نے بھی کوچنگ سے انکار کردیا

لاہور : ماضی کے عظیم کرکٹر یونس خان کے بعد پاکستان کی تاریخ کے سب سے کامیاب ٹیسٹ کپتان مصباح الحق نے بھی جونیئر ٹیم کی کوچنگ سے انکار کردیا۔ذرائع کے مطابق مصباح الحق نے نجی مصروفیات کی وجہ سے بورڈ کی پر کشش پیشکش کو مسترد کردیا ہے اور کہا کہ وہ پہلے سے طے شدہ اپنی نجی اور گھریلو مصروفیات کے باعث بورڈ کے ساتھ کام نہیں کرسکتے ۔مصباح الحق کا کہنا ہے کہ اگلے تین سال کیلئے ان کی مصروفیات طے ہیں، اس لیے وہ پاکستان انڈر 19 کرکٹ ٹیم کا ہیڈ کوچ نہیں بن سکتے ۔اس سے قبل سابق کپتان یونس خان نے مالی معاملات طے نہ ہونے کے باعث پی سی بی کی پیشکش کو رد کردیا تھا۔ پی سی بی اگلے تین سال کیلئے دور جدید کے ایسے سابق کھلاڑی کو پاکستان انڈر19کرکٹ ٹیم کا ہیڈ کوچ بنانا چاہتا ہے جو بچوں کیلئے رول ماڈل ہو اور کرکٹ کے حلقوں میں قابل احترام ہو۔یونس خان اور مصباح الحق کو جونیئر ٹیم دے کر بورڈ طویل منصوبہ بندی کررہا تھا لیکن بدقسمتی سے بورڈ دونوں کے ساتھ دو مختلف وجوہات کی بنا پر معاہدہ کرنے میں ناکام رہا۔ دو سابق کپتانوں سے انکار کے بعد اب بورڈ نے کسی اور کھلاڑی کو ٹارگٹ کرنا ہے ۔ذرائع کا کہنا ہے کہ کئی بڑے کھلاڑی جونیئر ٹیم کی کوچنگ کے بجائے سینئر ٹیم لینے میں دلچسپی رکھتے ہیں، جس کے باعث بورڈ کو مشکل پیش آرہی ہے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں