38

چولستانی اراضی پر لینڈ مافیاء کا راج ایف اے آئی نیوز نے پردہ فاش کردیا

بہاول پور/ایف ا�آئی نیوز
بہاول پور کے چولستان میں محکمہ چولستان ترقیاتی ادارہ کے عملہ اورافسران کے تعاون سے جگہ جگہ قبضہ گروپوں نے سیکڑیوں ایکڑاراضی پر قبضہ جماکرفصلیں کاشت کرلی ہیں چولستان میں سولرانرجی کے پلانٹ ٹربائنیں اور ٹیوب ویل نصب کر لیئے گئے ہیں جن کے زریعہ چولستانی اراضی کو سیراب کرکے فصلیں کاشت کی جارہی ہیں اور لینڈ مافیاء ان فصلوں سے کروڑوں روپئے کی لوٹ مارکرکے قومی خزانے کو نقصان پہنچارہے ہیں ٹوبہ کوری جو علاقہ مروٹ تحصیل فورٹ عباس میں آتا ہے اس جگہ کے نمبرداراللہ یارکوری نے محکمہ چولستان کے عملہ سے سازبازکرکے چولستانی اراضی قبضہ مافیاء کواونے پونے فروخت کرہا ہے اوراپنے چاربھائیوں کو چولستانی اراضی پر قابض کراچکا ہے حالانکہ اس کے ایک قریبی رشتہ دارمحمدہاشم کوری نے عدالت فورٹ عباس سے حکم امتناعی بھی حاصل کرکھا ہے مگراس کے باوجود بھی اللہ یارچولستانی اراضی دھڑادھڑ فروخت کرہا ہے اگرکوئی صحافی اس بارے میں نشاندہی کرتا ہے تو ان کے خلاف تھانہ مروٹ میں جھوٹے اور بے بنیاد الزامات پرمبنی مقدمات درج کرادیئے جاتے ہیں،باوثوق زرائع کے مطابق چولستان ٹوبہ کوری میں اللہ یارکوری نے دوبربعہ اراضی خود ہتھیا رکھی ہے،ان کے بھائیوں شاہ محمد کوری،بقامحمد کوری،احمد کوری نے بھی دودومربعوں پرقبضہ کررکھا ہے ،اسی ٹوبہ کی حدودمیں ممتازاعوان نے بھی چارمربعے قبضہ میں لیئے ہوئے ہیں،ممتازچندرام،اقبال چندرام نے بھی دودومربعوں پرقبضہ کرکھا ہے حمید بھٹی،بشیربلوچ وغیرہ نے بھی یہاں پرقبضے کررکھے ہیں ،چولستان میں لوٹ مار جاری ہے تحصیل یزمان کی حدودکڈ والہ نہرکنارے پربھی لینڈ مافیاء نے قبضے جمارکھے ہیں چولستان کی ہزاروں ایکڑ اراضی اس وقت لینڈ مافیاء کے قبضے میں ہے اگر نیب محکمہ چولستان کا ریکارڈ قبضے میں لے کراس کی تحقیقات کرے اور اللہ یار کوری کی تفتیش کی جائے تو اہم انکشافات سامنے آسکتے ہیں چولستانی مقامی باشندوں نے نے حکومت پنجاب اور حکومت پاکستان سے فوری نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے مزید انکشافات جلد ہی منظرعام پر لائے جارہے ہیں انتظار کریں،

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں