24

چین نے امریکہ کی کھربوں ڈالر کی صنعتیں تباہ کرنے کی تیاری شروع

بیجنگ: چین اور امریکہ کے مابین جاری تجارتی جنگ کے دوران چین نے کمیاب معدنیات کی امریکہ کو فراہمی روکنے پر غور شروع کردیا ہے۔ اگر ان معدنیات کی فراہمی روکی جاتی ہے تو اس سے امریکہ کی کھربوں ڈالر کی کئی صنعتیں تباہ ہوجائیں گی۔ بی بی سی نے اپنی ایک تحقیقاتی رپورٹ میں بتایا ہے کہ چین دنیا میں سب سے زیادہ یعنی 90 فیصد کمیاب معدنیات (ریئر ارتھ) کا حامل ملک ہے ۔ چونکہ سب سے زیادہ یہ معدنیات چین سے نکل رہی ہیں تو اس لیے چین ہی ان کا سب سے بڑا برآمد کنندہ بھی ہے، یہی وجہ ہے کہ امریکہ اپنی ضرورت کی 70فیصد ریئر ارتھ چین سے خرید رہا ہے۔ ریئر ارتھ 17 مختلف معدنیات کا ایک گروپ ہے جو مختلف صنعتی شعبوں میں استعمال ہوتی ہیں جن میں دوبارہ قابل استعمال ہونے والی ٹیکنالوجی، آئل ریفائنری، الیکٹرانکس اور شیشے کی صنعت شامل ہیں۔یہ معدنیات بجلی سے چلنے والی کاروں، موبائل فون جیسی مصنوعات کی تیاری میں انتہائی اہمیت رکھتی ہیں۔ چین کے سرکاری اخبار گلوبل ٹائمز نے کہا ہے کہ چین کمیاب معدنیات کی امریکہ برآمد کو روکنے پر سنجیدگی سے غور کر رہا ہے۔ امریکہ دوسرے ممالک سے بھی یہ معدنیات خریدرہا ہے لیکن اس کا زیادہ تر انحصار چین کی ریئر ارتھ پر ہی ہے۔ اگر چین کی جانب سے حالیہ تجارتی تنازعے کے دوران امریکہ کو ریئر ارتھ کی فراہمی روکی جاتی ہے تو اس کی کھربوں ڈالر کی صنعتیں تباہی کے دہانے پر پہنچ جائیں گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں