21

وزیراعظم نے گھبرا کر آدھی رات کو خطاب کیا , آئی ایم ایف کا بجٹ منظور نہیں ہونے دینگے : بلاول

اسلام آباد : پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ وزیر اعظم نے گھبرا کر آدھی رات کو خطا ب کیا ۔ آئی ایم ایف کا بجٹ منظور نہیں ہو نے دینگے ۔ وزیراعظم نے آدھی رات کو خوف کے مارے عوام سے خطاب کیا۔ انہو ں نے کہا کہ وزیراعظم کو خوف ہے کہ وہ ‘‘پی ٹی آئی ایم ایف’’ بجٹ پاس کروانے میں ناکام ہوجائیں گے اور ان کی حکومت گر جائے گی۔ انہو ں نے کہا کہ جبر اور دباؤ کارگر نہیں ہوگا، کوئی بھی باشعور شخص ٹیکسوں میں اضافے ، مہنگائی اور بے روزگاری کو ووٹ نہیں دے گا۔ ایک بیان میں ان کا کہنا تھا سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر کیخلاف تحریک عدم اعتماد لائی جاسکتی ہے اس سلسلے میں اپوزیشن جماعتوں سے بات کرکے تحریک عدم اعتماد لاسکتے ہیں۔ جبکہ دوسرے آپشن میں سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر کیخلاف عدالت میں بھی جاسکتے ہیں۔ بلاول بھٹو کا کہنا تھا بجٹ عوام دشمن ہے ،ہم منظور نہیں ہونے دیں گے اور اپوزیشن جماعتوں سے ملکر کوشش کریں گے کہ بجٹ منظور نہ ہو، اپوزیشن کو بجٹ کی کاپیاں نہیں دی گئیں ،لیکن ہم نے پھر بھی بجٹ تقریر سنی ۔ادھر بلاول سے سردار اختر مینگل نے ملاقات کی جس میں ملکی سیاسی صورت حال پر گفتگو کی گئی۔ اختر مینگل نے کہا سابق صدر آصف زرداری کی گرفتاری پر اظہار یکجہتی کے لئے آپ کے پاس آیا ہوں، حکومت 10 ماہ میں بی این پی کے 6 نکات پر عمل درآمد نہیں کرسکی۔ بلاول بھٹو نے مینگل سے اظہار تشکر کرتے ہوئے کہا پیپلزپارٹی ،بی این پی کے 6 نکات کو بالکل درست سمجھتی ہے ، اس بات کا بخوبی احساس ہے کہ بلوچستان کے عوام کی ہمیشہ حق تلفی کی گئی ہے ۔ بلاول

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں