8

اختر مینگل کی وزیراعظم سے ملاقات , بجٹ منظوری میں ساتھ دینے کی یقین دہانی

اسلام آباد:  تحریک انصاف نے اپنی اتحادی جماعت بی این پی مینگل کو منالیا۔اخترمینگل نے اپوزیشن کی اے پی سی میں شرکت سے انکار کردیا۔اختر مینگل نے وزیر اعظم کوبجٹ کی منظوری میں حکومت کا ساتھ دینے کی یقین دہانی کرا دی ۔جہانگیر ترین نے کہا آئندہ اتحادیوں میں دوری نہ ہو اسکا طریقہ کار بنا لیا،10ارب کا ترقیاتی فنڈ بی این پی کا حق ہے ۔اختر مینگل کی سربراہی میں وفد نے وزیر اعظم عمران خان سے پارلیمنٹ ہائوس میں ملاقات کی۔ذرائع کے مطابق وزیر اعظم نے اختر مینگل سے بجٹ کی منظوری کے موقع پر حکومت کا ساتھ دینے کی استدعا کی ،جس پر بی این پی سربراہ نے وزیر اعظم کو حکومت کے ساتھ پیدا ہونیوالے اپنے تحفظات سے آگا ہ کیا۔انہوں نے کہا حکومت کی تشکیل کے وقت ان سے جو وعدے کیے گئے تھے وہ اب تک پورے نہیں کیے گئے ، بلکہ حکومت نے ان سے بے رخی اختیار کر لی ، وزیر اعظم نے انہیں مطالبات پورے کرنے کا یقین دلایا اور کہا کہ ان کے مطالبات کو پورا کرنے کی بھرپور کوشش کریں گے ۔ملاقات کے حوالے سے وزیراعظم آفس سے جاری بیان میں کہا گیا کہ گزشتہ دس ماہ میں جو مشکلات سامنے آئی ہیں ان کے حل کیلئے طریقہ کار مرتب کرلیا گیا ہے تاکہ دونوں جماعتوں کے درمیان طے شدہ معاملات پر مکمل عملدرآمد یقینی بنایا جاسکے ۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے جہانگیر ترین نے کہا اختر مینگل اور ان کے وفد کو مطمئن کر لیا ہے ، لاپتا افراد کے معاملے میں بہت جلد پیشرفت ہوگی، بلوچستان کا وفاقی ملازمتوں میں کوٹہ 6 فیصد کرنے پر بھی اتفاق ہوگیا۔اس سے قبل پارلیمنٹ ہائوس میں وزیر اعظم کی زیر صدارت پاکستان ہائوسنگ پروگرام کا جائزہ اجلاس ہوا ، اس موقع پر عمران خان نے وزارت ہائوسنگ اینڈ ورکس کو اسلام آباد میں پاکستان ہاؤسنگ پروگرام کے منصوبوں پر کام تیز کرنے کی ہدایت کی ،انہوں نے چیئرمین سی ڈی اے کو اسلام آباد میں شجر کاری مہم مزید موثر بنانے کی ہدایت کی اور کہاکہ گرین ایریاز اور جنگلات کی حفاظت پر خصوصی توجہ دی جائے ۔ادھروزیر اعظم سے بابر اعوان اور فواد چودھری نے ملاقات کی ،جس میں موجودہ صورتحال سمیت مختلف امورپر تبادلہ خیال کیا گیا۔ وفاقی وزیر سائنس و ٹیکنالوجی سے گفتگو کرتے ہوئے عمران خان نے کہا سائنس اور ٹیکنالوجی کا فروغ ہمارے مستقبل کیلئے انتہائی اہمیت کا حامل ہے اور اس اہمیت کے پیش نظر وزارت سائنس اور ٹیکنالوجی میں خصوصی ٹاسکنگ کرنے کے اقدامات کو یقینی بنایا جائے ۔وزیر اعظم نے وزارت سائنس و ٹیکنالوجی میں ری سٹرکچرنگ کے اقدامات اور فواد چودھری کی کارکردگی کو سراہا۔ ممبر ان قومی اسمبلی ملک انور تاج، سیف الرحمن، پرنس محمد نواز ، ریاض فتیانہ، فضل محمد خان، رائے حسن نواز اور رائے محمد مرتضیٰ اقبال نے بھی وزیراعظم سے علیحدہ علیحدہ ملاقاتیں کیں۔بعدازاں عمران خان سے کراچی سے تعلق رکھنے والے ممبران قومی اسمبلی اکرم چیمہ، فہیم خان، عطا اللہ، آفتاب جہانگیر اور محمد اسلم خان نے ملاقات کی،ارکان نے کراچی کے مسائل اور ان کے حل کے حوالے سے گفتگو کی ۔قبل ازیں وزیر اعظم سے گور نرسٹیٹ بینک بھی ملے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں