8

لورالائی پولیس لائن پر حملہ ناکام، 3 خودکش بمبار مارے گئے: ایک پولیس اہلکار شہید، 2 زخمی

اسلام آباد؍ وہوا: سکیورٹی فورسز نے پولیس لائن لورالائی میں دہشتگردی کی بڑی کارروائی ناکام بناتے ہوئے تینوں خود کش حملہ آور مار دیئے ، آپریشن میں پولیس ہیڈ کانسٹیبل اﷲ نواز شہید اور 2 کانسٹیبل زخمی ہوئے ۔آئی ایس پی آر کے ترجمان کے مطابق بدھ کی صبح 3 خودکش بمباروں نے لورالائی پولیس لائن پر حملے کی کوشش کی، تینوں خودکش حملہ آوروں کو پولیس نے داخلی چیک پوسٹ پر موثر طریقے سے چیک کیا، ایک خودکش حملہ آور داخلی دروازے پر ہی ہلاک کردیاگیا جبکہ دیگر دو پولیس لائن کے اندر داخل ہونے میں کامیاب ہوگئے ، ایف سی اور پولیس کوئیک ریسپانس فورس فوری طور پر جائے وقوعہ پر پہنچیں اور علاقے کو گھیرے میں لے لیا، فائرنگ کے تبادلے میں ایک خودکش بمبار نے اپنے آپ کو اڑا دیا جبکہ دوسرے خودکش بمبار کو سکیورٹی فورسز نے ہلاک کردیا۔ترجمان کے مطابق دہشتگردوں سے فائرنگ کے تبادلے میں کانسٹیبل اﷲ نواز شہید ہوگئے جبکہ 2 کانسٹیبل زخمی ہوئے ۔ سکیورٹی فورسز نے لورالائی پولیس لائن کمپائونڈ کو کلیئر کردیا۔ شہید پولیس اہلکار اﷲ نواز اور زخمی ادریس کا تعلق پنجاب کے علاقے وہوا سے ہے ۔محمد ادریس کے دو بیٹے جبکہ اﷲ نواز کا ایک بیٹا بھی بلوچستان پولیس میں ملازم ہیں۔زخمی محمد ادریس نے ٹیلی فون پر بتایا کہ لورالائی پولیس لائن میں محکمانہ پروموشن کیلئے بی۔ ون امتحان جاری تھا کہ اچانک دہشتگردوں نے حملہ کرکے اندھا دھند فائرنگ شروع کردی ۔شہید اﷲ نواز نے 6 بچے سوگوار چھوڑے ہیں، ان کا جسد خاکی آبائی قصبہ لتڑا لایا جائے گا جہاں نماز جنازہ کی ادائیگی کے بعد تدفین کی جائے گی۔مسلم لیگ (ن )کے صدر اور قائد حزب اختلاف شہباز شریف نے حملے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ پولیس، ایف سی اور کوئیک رسپانس فورس کو دہشتگردوں کے خلاف بھرپور مقابلے پر خراج تحسین پیش کرتے ہیں۔ ایک بیان میں انہوں نے کہا شہیدسپاہی اﷲ نواز قوم کا سر فخر سے بلند کرنے والے عظیم بیٹوں کی فہرست میں شامل ہوگیا ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں