70

وفاقی بجٹ میں نافذ کردہ ٹیکسز کے خلاف آل پاکستان انجمن تاجران کی کال پر شٹرڈاؤن ہڑتال کیا گیا۔

شکارپور(امیر علی بھٹو):وفاقی بجٹ میں نافذ کردہ ٹیکسز کے خلاف آل پاکستان انجمن تاجران کی کال پر شٹرڈاؤن ہڑتال کیا گیا۔ تفصیلات کے مطابق ۔آل پاکستان انجمن تاجران کی جانب سے حکومتی معاشی پالیسیوں اور اضافی ٹیکسوں اور مہنگائی کے خلاف ملک گیر ہڑتال کی کال پر ملک بھر کی طرح شکارپور میں بھی آل سمال ٹریڈرز اینڈ کاٹیج ویلفیئر ایسوسی ایشن ( رجسٹرڈ) کی جانب سے ہڑتال کے گئی ہڑتال کے باعث ،اناج منڈی، کریانہ مارکیٹ، کلاتھ مارکیٹ۔صرافہ بازا،مینا بازار، رائس ملز، گول مارکیٹ، بھٹائی بازار سمیت چھوٹے بڑے کاروباری مراکز مکمل بند رہے، جماعت اسلامی، جی یو آئی، اور پاکستان سنی تحریک نے بھی ہڑتال کی حمایت کی تھی دوسری جانب ہڑتال کے باعث عوام کو اشیائے خوردونوش کی فراہمی میں پریشانی کا سامنا کرنا پڑا ضلعے بھر مین تمام کاروباری مراکز میں ساز و سامان کی خریداری کی سپلائی اور فراہمی کا نظام معطل رہی، اس موقع پر صدر آل سمال ٹریڈرز اینڈ کاٹیج ویلفیئر ایسوسی ایشن ( رجسٹرڈ) سمیع اللہ شیخ لالا سرفراز، نصرت شھزاد مغل، آغا ساجد خان وحيد قريشي، صوفي اعجاز ميمن، آصف خان نے کہا کہ عوام دشمن مرکزی بجٹ، ظالمانہ ٹیکسوں اورکمرتوڑمہنگائی نے تاجربرادری اور عوام کو سخت پریشان کررکھاہے۔ تاجر برادری ظالمانہ ٹیکسوں کی بھرمار کو کسی صورت قبول نہیں کرے گی اور سرکاری ملازمین کی تنخواہوں پر بھی ماہانہ بنیاد پر بھاری انکم ٹیکس لگانا انتہائی ظلم ہے انہوں نے مزید کہا کہ ہم نئے ٹیکسز ہر گز نہیں مانتے حکومت فوری طور پر لگائے گئے تمام ظالمانہ ٹیکسز واپس لے اور تاجروں پر لگائے گئے بے جا ٹیکسز ختم نہ کئے گئے تو احتجاج کے دائرے کو وسیع کریں گے آخر میں سمیع اللہ شیخ نے اس موقع پر ہڑتال کو کامیاب بنانے پر تاجر برادری اور چھوٹے بڑے کاروباری حضرات کا شکریہ ادا کیا کے ان کے بھرپور تعاون سے ہی آ ج ہڑتال کامیاب ہوہی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں