29

وزیراعلیٰ نے موبائل پولیس خدمت مراکز پروگرام کا افتتاح کردیا

لاہور: وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے پولیس کے منجمد فنڈز کی بحالی اور شہدا کے ورثا کیلئے ہاؤ سنگ سکیم میں الگ کوٹے کا اعلان کر دیا۔گریٹر اقبال پارک لاہور میں پولیس خدمت مرکز کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے کہا شہریوں کو ان کی دہلیز پر خدمات کی فراہمی تحریک انصاف کی حکومت کا مشن ہے ،36اضلاع کیلئے موبائل پولیس خدمت مراکزکے پروگرام کے افتتاح پر انہوں نے کہا موبائل پولیس خدمت مرکز سے عوام کو 14 قسم کی سروسز فراہم کی جائیں گی،2 سال میں 25 لاکھ شہریوں کو سروس کی فراہمی کامیابی کی ناقابل تردید دلیل ہے ، چھ ماہ کے قلیل عرصہ میں تقریباً ساڑھے پانچ لاکھ لوگ مستفید ہوچکے ہیں ۔وزیراعلیٰ نے پولیس خدمت مرکزکا دورہ کیا اور موبائل پولیس خدمت مرکز کا معائنہ بھی کیا۔ وزیراعلیٰ نے خدمت مرکز کے ذریعے شہریوں کو فراہم کی جانے والی سہولیات کا جائزہ لیا۔وزیراعلیٰ کو پولیس خدمت مراکز اور موبائل پولیس خدمت مراکز میں فراہم کی جانیوالی 14سروسز کے بارے میں بریفنگ دی گئی۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے کہا خدمت مراکز میں آنے والے شہریوں کو دستاویزات کے حوالے سے بار بار چکرلگانے کی زحمت نہ دی جائے ۔اسٹام پیپرز کی فراہمی کی ذمہ داری خدمت مراکز پر ہونی چاہیے اوراس کیلئے بینک آف پنجاب کے کاؤنٹر خدمت مراکز میں قائم کیے جائیں۔انہوں نے کہا پولیس خدمت مراکز اور موبائل پولیس خدمت مراکزکے ذریعے ایف آئی آر کی کاپی اور دیگر خدمات کی بآسانی فراہمی یقینی بنائی گئی ہے ، پولیس خدمت مراکز سے شہریوں کو سفر کی زحمت سے نجات ملی ہے اور ان مراکز کا قیام شہریوں کو ریلیف دینے کیلئے رجحان ساز اقدام ہے ۔ پولیس خدمت مراکز اور موبائل پولیس خدمت مراکز کا دائرہ کار مزید بڑھائیں گے ۔3 ماہ قبل ملتان اور بعدازاں رحیم یار خان میں پولیس موبائل خدمت مرکز کا افتتاح کیا تو میرے ذہن میں تھا کہ یہ ایک ایسی سہولت ہے جس کا دائرہ کار پنجاب کے تمام دشوار گزار علاقوں تک ہونا چاہیے اورآج اللہ تعالیٰ کے فضل و کرم سے میں نے 36 پولیس موبائل خدمت مراکز کا افتتاح کیا ہے اور یہ مقام شکر ہے کیونکہ ہم نے عوام کی خدمت کے ایک اور وعدے کی تکمیل کی طرف قدم بڑھا دیا ہے ۔پولیس خدمت مراکز کے قیام سے صرف شہریوں کو ہی سہولت حاصل نہیں ہوتی بلکہ پولیس ریکارڈ کے تحفظ اور پولیس سٹیشن ریکارڈ مینجمنٹ سسٹم یعنی کے ذریعے محفوظ رسائی کی سہولت بھی حاصل ہوتی ہے ۔ اس خدمت مرکز میں کریمنل ریکارڈ مینجمنٹ سسٹم یعنی اور اینٹی وہیکل لیفٹنگ سسٹم بھی موجود ہے جس سے عوام ہی نہیں بلکہ پولیس کو بھی تفتیش میں مدد ملتی ہے ۔ وزیراعلیٰ نے وزیراعظم ہاؤسنگ سکیم میں پنجاب پولیس کے شہدا کے اہلخانہ کیلئے الگ کوٹہ مختص کرنے کا اعلان کیااورکہا کہ پنجاب پولیس کے شہدا کے اہلخانہ کی مالی معاونت کے کیسز کلیئر کرکے ان کا حق ان تک پہنچا دیا گیا ہے اور میں نے واضح ہدایات دی ہیں کہ آئندہ شہدا پولیس کے خاندانوں کی مالی معاونت کے کیسوں کو 7 روز کے اندر کلیئر کیا جائے ۔وزیراعلیٰ نے 2008 سے پنجاب پولیس کے منجمد ایف ڈی الاؤنسز بڑھانے کے دیرینہ مطالبے کی منظوری کابھی اعلان کرتے ہوئے کہا ہم اگرچہ مشکل معاشی حالات سے گزر رہے ہیں لیکن اس کے باوجو دمیں یقین دلاتا ہوں کہ پنجاب پولیس کو ممکنہ حد تک درکار وسائل فراہم کئے جائیں گے ۔دریں اثنا وزیر اعلیٰ عثمان بزدار نے ایک ٹویٹ میں کہاتحریک انصاف چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی کے ساتھ چٹان کی طرح کھڑی ہے ،چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی کیخلاف تحریک عدم اعتماد بے وقت کی راگنی ہے ۔اپوزیشن کے ہر ہتھکنڈے کا بھرپور جواب دیا جائیگا۔تحریک انصاف اتحادی جماعتوں کیساتھ ملکر تحریک عدم اعتماد کو ناکام بنائے گی ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں