83

بلا عنوان

بلا عنوان
تحریرـ سابق ڈی ایس پی غلام عباس
چند یوم قبل وزیر اعظم پاکستان جناب عمران خان عام پرواز سے امریکہ کے کامیاب دورہ سے آ رہے تھے کہ ایئر ہوسٹس عمران خان کے ساتھ سیلفی بنانے میں کامیاب رہی ـ کچھ عرصہ قبل راقم الحروف کی جناب عمران خان نیازی کے ساتھ ڈیوٹی تھی دل میں تمنا نے انگڑائ لی کہ چونکہ اس وقت خان صاحب خوشگوار موڈ میں ہیں اور پھر یہ کہ رش بھی کم ہے کیوں نہ ان کے ساتھ سیلفی بنا لی جائے چونکہ میرے پاس موبائل فون بٹنوں والا تھا حسرت دل ہی میں رہ گئـ تاریخ خود کو دہراتی رہتی ہے ایسے ہی گذشتہ ماہ ایک تقریب میں کرائم فائٹر تشریف لائے ، چار چاند لگ گئےـ پی ٹی شیخ محمد امین نوے کے پیٹے میں ہوں گے ـ کرائم فائٹر کے ساتھ سیلفی کیلئے لپکے مگر ان کا فون بھی ٹچ والا نہیں تھاـ لہذا کامیاب نہ ہو سکے ـ ٹریفک وارڈن احتشام الر حیم سیلفی لینے میں کامیاب ٹھہرےـ خوبصورت تقریب میں شہری کرائم فائٹر کے ساتھ سیلفیاں بناتے رہے ایک ہجوم نے انہیں حصار میں رکھاـ بے تحاشا سیلفیوں کی وجہ سے ماحضر تا خیر سے شروع ہو سکاـ عرض کرتا چلوں سپاہی سے آئی جی پولیس تک بنیادی طو رپر سب ہی کرائم فائٹر ہو تے ہیں مگر خوشگوار حیرت یہ ہے کہ پہلوانوں کے شہرمیں لفظ کرائم فائٹر آتے ہی ذہن و قلب میں ڈی ایس پی عمران عباس چدھڑ کا نام روشن ہو جاتا ہےـ مسز پی ٹی محمد امین اور معروف شاعرہ عرفانہ امر دیگر شریف شہریوں کی طرح کرائم فائٹر کو شاندار کارکردگی پر شاباش دیتی رہتی ہیںـ نیک نام بہادر منجھے ہو ئے پولیس آفیسر عمران عباس چدھڑ جرائم کے خلاف اپنی ٹیم کے ہمراہ شبانہ روز کوشاں ہیںـ
صاحب خانہ نے چور کو دائیںٹانگ سے پکڑلیا ‘ چور بڑا چالان تھا’ اس نے مالک مکان سے التماس کی کہ میری دائیں ٹانگ زخمی ہے ‘ براہ مہربانی بائیں پکڑ لیں۔ شخص چور کی باتوں میںآ گیا ‘ داییں ٹانگ چھوڑ دی’ بائیں پکڑنے کے لئے لپکا’ مگر چورنو دو گیارہ ہو گیا۔ پہلوانوں کے شہر سی آئی اے ہیڈ کوارٹرز والے چور ‘ ڈاکو’ نوسر باز’ بھتہ خور’ منشیات فروش و سماج دشمن عناصر کی ایک نہیں سنتے بلکہ ان کو کان سے پکڑ کر حوالات کی ہوا کھانے پر مجبور کردیتے ہیں۔
کرائم فائٹر عمران عباس چدھڑ نے جرائم پیشہ افراد گرفتار کرکے ان کے قبضہ سے سات کروڑ 8 لاکھ82 ہزار روپے کامال برآمد کرکے کمال کر دکھایا محکمہ کے وقار کو دو چند کیا اگر یہ کہا جائے تو بے جانہ ہوگا کہ سی آئی اے نے کروڑوں کی برآمدگی کرکے پولیس وقار کو چار چاند لگا دیئے بلکہ چار چاند تھوڑے ہیں کئی چاند جڑ دیئے۔ آرپی او طارق عبا س قریشی اور سٹی پولیس آفیسر ڈاکٹر معین مسعود آئے روز سی آئی اے کو شاباش سے نواز تے رہتے ہیں بارہ مہینوں میں 14 قتل ٹریس آئوٹ ہوئے ۔تین ڈکیتی معہ قتل کے پرچے بھی حل کئے۔ اغواء برائے تاوان کے تین مقدمے ٹریس آئوٹ کئے گئے۔ پراپرٹی کے 64 مقدمات چالان ہو ئے’ بھتہ خوری کے پانچ مقدمات کے ملزمان کو جیل کے سلاخوں کے پیچھے بند کروا دیا ۔ بیرون ملک سے 6 خطرناک اشتہاری گرفتار کئے ۔ حضرت علامہ اقبال کاشعر دیکھیں
دشت تو دشت ہیں دریا بھی نہ چھوڑے ہم نے
بحر ظلمات میں دوڑا دیئے گھوڑے ہم نے
27 ۔ اشتہاری گرفتار کئے۔ ایک ملزم پکڑنا دشوار ہوتا ہے اور پھر یہ کہ ایک گینگ قابو کرنے کیلئے بڑے پاپڑ بیلنا پڑتے ہیں خوشگوار حیرت ملاحظہ کیجیئے۔ سی آئی اے نے 64 ڈکیت گینگ گرفتار کرکے شہریوں کے دل جیت لئے۔ اعلی افسران سے شاباش وصول کی ۔اگر اسلحہ کی طرف دھیان کریں تو کرائم فائٹر اور ان کی ٹیم نے 3 کلاشنکوف’ 5 اسٹین گن’ 1 نائن ایم ایم رائفل ‘ 4بندوق بارہ بور و پسٹل و غیرہ برآمد کر کے محکمہ کا نام بلند کیا۔ منشیات ایک ایسا روگ ہے جو قوم کو دیمک کی طرح چاٹ رہی ہے اس ضمن میں علمائے کرام’ اساتذہ اور سول سو سائٹی کا فرض اولین ہے کہ اس ناسورکی طرف دھیان دیں اور گلی’ محلوں میں اس زہر کو روکنے کیلئے پولیس کو مطلع کریں تاکہ نئی پود اس خطرناک مرض سے بچ سکے ۔ ڈی ایس پی عمران عباس چدھڑ اور ان کی مایہ ناز ٹیم نے10 کلو چرس’ 2 کلو افیون اور 42 بوتل ولائتی شراب برآمد کرکے ملزمان کو قانون کے شکنجہ میں کس د یا۔ 36 افراد جن کو ملزمان نے بے کار کر دیا سی آئی اے نے ان کو پھر سے صاحب کار کر دیا ۔186 شہریوں کو ان کی چوری شدہ چھینی گئیں موٹر سائیکلیں برآمد کرکے لوٹا ئیں۔ 73 لاکھ 90 ہزار مالیتی بھینسیں چوروں ‘ رسہ گیروں سے برآمد کرکے مالکان کے حوالے کیں ۔ یوں شہریوں نے اربوں کی دعائیں پولیس پر نچھاور کیں آخر میں شعر
یہ جو چپ رہ کے بول سکتاہوں
تیری آنکھوں سے میں نے سیکھا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں