3

یو این سیکرٹری جنرل کا دو ٹوک بیان پاکستان کے موقف کی ترجمانی ہے،فردوس عاشق اعوان

اسلام آباد: وزیراعظم کی معاون خصوصی فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ یو این سیکرٹری جنرل کا دو ٹوک بیان کہ بھارت کشمیر کی حیثیت بدلنے سے باز رہے پاکستان کے موقف کی ترجمانی ہے۔معاون خصوصی فردوس عاشق اعوان نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں کہا ہے کہ مسئلہ کشمیر کا حل سلامتی کونسل کی قراردادوں کے تحت ہونا مودی کا اقدام جمہوریت اور بین الاقوامی قوانین پر کھلا حملہ ہے،یہ اقدام ثبوت ہے کہ وہ جمہوری روایات پر یقین نہیں رکھتے۔ فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ دنیا خطے کو پر امن بنانے کیلئے وزیراعظم کی سوچ کے ساتھ کھڑی ہے جس کا واضح ثبوت چین کا پاکستان کی حمایت پر دو ٹوک موقف ہے، انہوں نے کہا کہ پاکستان ایک زمہ دار ریاست کے طور پر بین الاقوامی قوانین اور اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق مسئلہ کشمیر کے حل کا منتظر ہے.معاون خصوصی نے کہا کہ صرف مسلمان آبادی والی ریاست کا سپیشل سٹیٹس ختم کرنا اس بات کا ثبوت ہے کہ ہٹلر مودی انتہا پسندانہ سوچ کو پروان چڑھایا جا رہا ہے۔مودی کے غیر قانونی اقدام نے بھارت کے خود ساختہ الحاق کی دستاویز کو غیر موثر کر دیا۔کشمیر آج26 اکتوبر1947 کی پوزیشن پر ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں