46

مقبوضہ کشمیر میں کرفیو کا 24 واں روز، لوگ گھروں میں محصور

سرینگر: جنت نظیر وادی بھارتی ہٹ دھرمی کی وجہ سے دنیا کی سب سے بڑی جیل بن گئی، 24 ویں روز بھی کرفیو نافذ ہے، کاروبار مکمل بند ہوگئے، گھروں میں محصور کشمیری کھانے پینے کی اشیا کے لیے ترس گئے۔کشمیریوں کی زندگی جہنم بنا دی گئی، کھانے پینے کی اشیاء ادویات ختم ہوگئی، چپے چپے پر تعینات بھارتی فوج ڈائلسز کے مریضوں کو ہسپتال جانے کی اجازت نہیں دے رہی۔ کرفیو کی وجہ سے ادویات کی بھی قلت ہوگئی۔بھارتی فوج گھروں سے باہر نکلنے والوں کو پیلٹ گن سے نشانہ بنا رہی ہے، چھ سالہ بچی والد کے ساتھ بائیک پر گئی تو اسے بھی پیلٹ گن سے نشانہ بنایا گیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں