80

وازیر اطلاعات خیبر پختون خواہ شوکت یوسفزی کادورہ ڈسٹرکٹ پریس کلب شانگلہ کادورہ

شانگلہ الپوری ( رضاشاہ سے ) حلقہ پی۔کے۔23 شانگلہ پی۔ٹی۔ائی کے منتخب ایم ۔پی۔ایے وازیر اطلاعات خیبر پختون خواہ شوکت یوسفزی کادورہ ڈسٹرکٹ پریس کلب شانگلہ کادورہ کیا مقامی صحافیوں کے ساتھ ملاقات کہ دوران وازیر موصوف گول مل گیے اس موقعہ پر شوکت یوسفزی نے شانگلہ پریس کلب کے صدر رضاشاہ کو بیس لاکھ روپے کے گرانٹ کا چیک بھی دیا اس موقعہ پر شانگلہ پریس کلب کے جملہ صحافی بھی موجود تھے جس میں شانگلہ پریس کلب کے چیف کونسل ناصر محمود ناصر ۔اے وی ٹی خیبر کے نمایندہ خالد خان ۔مشرق کا نمایندہ فضل سبحان ۔اوصاف کے نمایندہ افتاب حسین ۔صابر شاہ کے علاوہ دیگر ممبران نے کثیر تعداد میں بھی شرکت کیا مقررین نے اپنے خطاب کے دوران وزیر اعلی خیبر پختون خواہ محمود خان ،وزیراطلاعات شوکت یوسفزی کا شکرایہ ادہ کرتے ہوے کہا کے وزیر اعلی خیبر پختون خواہ نے اپنے دورہ شانگلہ کے موقعہ پر شانگلہ پریس کلب کے صحافیوں کیلے بیس لاکھ روپے کہ گرانٹ کا اعلان کیا تھا جس میں وزیر اطلاعات شوکت یوسفزی کا اہم رول تھا کیونکہ ڈسٹرکٹ پریس کلب شانگلہ گزشتہ سات سالوں سے حکومتی ہر قسم کی مراعات سے محروم تھا اور مقامی صحافی شدید مالی بحران کے شکار تھے لیکن اج موصوف وزیر نے اس کو عملی جامہ پہنا کر شانگلہ پریس کلب کے سحافیوں کے دل جیت لیے ہیں جس پر ہم جملہ صحافی برادری وازیر اعلی خیبر پختون خواہ محمود خان اور وزیر اطلاعات شوکت یوسفزی کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں اور ان کا شکرایہ ادہ کرتے ہیں کہ انھوں نے اپنے دورے اقتدار میں صحافیوں کا یہ دیرانہ مطالبہ حل کر دیا شوکت یوسفزی نے خطاب کرتے ہوے کہا کے ہماری یہ کوشش ہوگی کے ہم صحافیوں کے تمام تنظیموں کو فعال بناے اور ہر قسم کی سہولیات فراہم کریں تاکہ صحافت ملک کا چھو تھا ستون ہے یہ ہر وقت میں مظبوط اور مستحکم ہونا چاہے کیونکہ ملک کی تعمیر واترقی میں صحافی برادری کا ایک اہم رول ہوتا ہے ہماری یہ کوشش ہے کے ہم ملک خداداد کو موجودہ بحرانوں سے نکل دیں اور ہر ایک پاکستانی کو انصاف مل سکیں لیکن سابقا ادوار میں صاحب اقتدار نے عوامی مسایل کو حل کرانے بجاے اپنی ذاتی مسایل کی حل پر زیادہ ترجہی دی ہے جس کی وجہ سے اج ملک شدید بحرانوں کا شکار ہے جس کیلے عمران خان میدان میں نکلے ہوے ہیں ایک سوال کے جواب میں یوسفزی نے کہا کے اکثر لوگ کہتے ہیں کہ عمران خان کی حکومت نے اپوزیشن کے ستاھ ڈیل جاری ہے تو ڈیل کی بات اس حد تک سحیی ہے ہم کہتے ہیںکے جنہوں نے ملک کو جس بے دردی سے لوٹا ہے تو وہ اس ملک ور قوم کے مشترکہ مجرم ہیں لہذاہ اہ عوام کا لوٹا ہوا پیسہ واپس کریں تو ہماری حکومت ان مجرموں کو جیلوں سے واپس نکا ل دے گی مولانا فضل الرحمن کی دھرنے کے بار میں جواب میں جواب میں انھوں نے کہا کے مولانا صاحب کو اسلام اباد میں ایک اچھے سے بنگلے کی اس وقت اشد ضرورت ہے لیکن وہ اسوقت ہم نہیں دے سکتے ہیں لہذاہ و اپنے طاقت کا مظاہرہ کریں اس وقت ملک شدید مہنگای اور بے روزگاری کے بحران کاشکار رہا لیکن انشا اللہ وہ دن دور نہیں کے ہمارہ ملک پاکستان پوری عالم میں معاشی طور پر نمایا پوزیشن میں ہوگا کیونکہ اس وقت ہماری اندونی اور بیرونی پالیسی کی لحاظ سے ترقی پر گامزان ہے اور روز بہ روز مستحکم ہوتی جارہی ہے جو پوری قوم کے سامنے ہیںپیپلز پارٹی کے دورے حکومت میں ملک پر چھ ارب قرض تھا جو مشرف کے دور میں پندرہ ھزار ارب تک پہنچ گیا جو نواز شریف کے دور میں تیس ھزار ارب تک پہنچ گیا تھا لیکن اج ہم فخر سے کہہ سکتے ہیں کہ موجودہ حکومت نے اپنے اقتدار میں گیارہ سوارب ڈالر کا قرضہ واپس کر دیا ہے جو گزشتہ حکومتوں نے عوام کے نام پراپنے عیاشیوں کے نظر کیے تھے ہمیں عوام کے مشکلات کا احساس ہے لیکن یہ مشکل وقت زیادہ دیر تک نہیں رہگااور عوام سے کیے گیے وعدے پورے کیے جاینگیں تقریب کے دوران وقار احمد خان سابق امیدوار قومی اسمبلی اور پاکستان تحریک انصاف کے دیگر عہداران اور کاکنان نے بھی شرکت کیا ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں