14

ایران سعودی عرب کشیدگی ،وزیر اعظم عمران خان آج ایران کے دورے پر روانہ ہونگے

اسلام آباد (عباس ملک سے) وزیر اعظم عمران خان ایران سعودی عرب کشیدگی کے تناظر میں آج ایران کے ایک روزہ سرکاری دورے پر روانہ ہونگے اور اس کے بعد سعودی عرب کا دورہ کریں گے ۔نجی نیوز چینل کے مطابق وزیر اعظم عمران خان آج ایران کے دورے پر روانہ ہونگے۔ وزیر اعظم دورہ ایران کے دوران ایرانی صدر حسن روحانی اور رہبر اعلیٰ آیت اللہ خامنائی سے ملاقاتیں کریں گے ۔عمران خان ایرانی قیادت سے خطے میں امن و سلامتی کے امور پر بات چیت کریں گے ۔وزیر اعظم ایران کے بعد سعودی عرب جائیں گے ، ڈی جی آئی ایس آئی ، وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی اور معاون خصوصی زلفی بخاری بھی وزیر اعظم کے ساتھ ہونگے ۔واضح رہے کہ وزیر اعظم عمران خان ایران سعودیہ کشیدگی کم کرانے کے تناظر میں سہولت کار کا کردار ادا کررہے ہیں ۔ اس حوالے سے شاہ محمود قریشی کہہ چکے ہیں کہپاکستان سعودی عرب اور ایران میں غلط فہمی دور کرنے کیلئے ضرور کردار ادا کرے گا ، یہ خطہ اب کسی اور چپلقش کا متحمل نہیں ہوسکتا ۔ انہوں نے کہا کہ ہم سعودی عرب اور ایران کے درمیان کوئی ثالث ہونے کا دعویٰ نہیں کررہے ہم سہولت کار کا کردار ادا کررہے ہیں کہ دو برادر ملکوں میں جو غلط فہمیاں ہیں ان کو کیسے دور کیا جاسکتا ہے ؟وزیرخارجہ نے کہا کہ ہمارا پہلا مقصد یہ ہے کہ ہم جنگ کی طرف نہ جائیں اور معاملات کو مذاکرات سے حل کریں ، جنگ مسائل کاحل نہیں ہے ، جنگ سے امہ کا نقصان ہوگا اور پاکستان پر بھی اس کا اثر پڑے گا ،عالمی معیشت بھی متاثرہوگی ۔انہوں نے کہا کہ ہم نیک نیتی سے جارہے ہیں اور نشستیں ہونگی ، ماضی میں پاکستان نے ایسی کوئی خاص کوشش نہیں کی ، اس لئے اس پر کوئی زیادہ پیش رفت نہیں ہوسکی ۔ ان کا کہنا تھا کہ مسئلہ یہ ہے کہ مختلف ممالک کی مختلف خواہشات ہیں اور اعتماد کا فقدان ہے ۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان اس معاملے میں اپنا کردار ادا کرسکتاہے ، بہت سے ممالک ایسے ہیں جوچاہیں بھی تو یہ کردار ادا نہیں کرسکتے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں