95

قبر میں زندہ درگور ہونیوالا پولیس کے ہتھے چڑھ گیا

گگومنڈی : گگو منڈی کے نواح اڈا کچی پکی میں قبر میں زندہ دفن ہوکر چلہ کشی کرنے والے جعلی پیر کی پولیس کے ہاتھوں چھترول ہوگئی۔ خبریں میڈیا گروپ کے مطابق ملک محمد امیر نے گھر میں قبر کھود کر 40 روز کیلئے خود کو اس میں بند کرلیا تھا۔ سادہ لوح لوگ قبر پر چڑھاوے چڑھانے کے ساتھ منتیں بھی مانگنے لگے تھے۔ ایک ہفتہ قبل امیر نے چلہ کاٹنا شروع کیا، اس کے بھائی عرفان نے گاﺅں گاﺅں جاکر لاﺅڈ سپیکر پر اپنے بھائی ملک محمد امیر کے چلہ کاٹنے کے اعلانات بھی کرائے تھے۔ کئی روز تک مقامی پولیس نے اس جانب کوئی توجہ نہ دی۔ علاقہ کے سادہ لوح مرد و خواتین نے قبر پر آکر چڑھاوے بھی چڑھانا شروع کردئیے۔ گزشتہ روز اطلاع ملنے پر ایس ایچ او مہر ریاض سیال نے بھاری نفرتی سمیت چھاپہ مار کر قبر سے ملنگ محمد امیر کو نکال کر خوب چھترول کے بعد حوالات میں بند کردیا۔ اس کے بھائی محمد عرفان کو بھی گرفتار کرلیا گیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں